مرکزی مینیو کھولیں

وکی اقتباسات β

38254-new folder-12.svg ویکی اقتباسات میں خوش آمدید

آزاد مجموعہ اقوال و اقتباسات، جس میں ہر کوئی ترمیم کر سکتا ہے۔

ہفتہ 21 جولا‎ئی 2018، 17:24 (م ع و)
اردو زبان میں 447 اقتباسات پر مشتمل صفحات موجود ہیں.
موجودہ متحرک صارفین 6 ہیں.

آج کا اقتباس
Bottle Iran 16.JPG

کہتے ہیں ایک خاندان میں چینی کا ایک قیمتی اور قدیمی گلدان ہوا کرتا تھا۔ ایک لا ابالی نوجوان نے بوڑھے جد سے اس کی اہمیت کے بارے پوچھا، جواب ملا کہ وہ نسلوں سے خاندان میں سب سے قیمتی ورثہ کی حثیت سے محفوظ چلا آرہا ہے اور خاندان کے ہر فرد اور نسل کا فرض ہے کہ اس کی حفاظت کرے۔ نوجواں نے کہا، اب اس کی حفاظت کا تردد ختم ہوا کیونکہ چینی کا وہ گلدان موجودہ نسل کے ہاتھ سے پھسل کر فرش پر گرا اور چکنا چور ہو گیا۔ بو ڑھا بولا، حفاظت کا تردد ختم ہوا ندامت کا دور کبھی ختم نہ ہو گا۔ مزید


منتخب موضوع

Mens clothes lilac.JPG

لباس یا ملبوسات، جسم کے بعض حصون کو چھپانے، ڈھانپنے کے لیے استعمال ہوتا ہے۔


اس موضوع پر اقتباس درج کریں

  • قرآن مجید نے سورہ بقرہ کی آیت ۱۸۷ میں عورت کو مرد کا لباس اور مرد کو عورت کو لباس قرار دیا ہے۔ قرآن کی اس عجیب تشبیہ میں بہت سے نکات پوشیدہ ہیں۔:​

  • لباس کو رنگ، جنس اور قیمت میں انسان کے مناسب ہونا چاہیے۔ اسی طرح شوہر اور بیوی کو بھی ہم کفو اور ان کی شخصیت اور فرہنگ کی آپس میں مطابقت ہونی چاہیے۔​
  • لباس انسان کے لیے باعث زینت اور باعث آرام ہے۔۔۔ اسی طرح نیک شوہر یا بیوی انسان کے لیے باعث زینت وآرامش ہے۔​
  • لباس انسان کے عیوب کو چھپاتا ہے۔ اسی طرح مرد وعورت کو بھی چاہیے ایک دوسرے کے عیوب اور رازوں کی حفاظت کریں۔​
  • لباس انسان کو سردی اور گرمی سے بچاتا ہے۔ اسی طرح نیک ہمسر انسان کو گناہوں کی گرمی اور سردی سے بچاتا ہے۔​
  • موسم کے مطابق انسان لباس پہنتا ہے۔ ہوا اگر سرد ہو تو ہم موٹا لباس پہنتے ہیں اور اگر سرد ہو تو نازک لباس پہنتے ہیں۔ اگر شوہر غصے میں ہے تو بیوی کو چاہیے کہ نرمی سے اس سے برتاو کرے۔ اور اسی طرح اگر بیوی تھکی ہوئ ہے تو شوہر کو چاہیے گھر کے کاموں میں اس کی مدد کرے۔​
  • انسان اپنے لباس کو آلودگی اور گندگی سے بچاتا ہے۔۔۔ مرد وعورت میں سے ہر ایک کو چاہیے کہ دوسرے کو گناہ کی آلودگی سے بچا لے۔​
- گنجینہ معارف، جلد 2​
  • “کسی کو اس کی ذات اور لباس کی وجہہ سے حقیر نہ سمجھنا کیونکہ تم کو دینے والا اور اس کو دینے والا ایک ہی ہے اللہ۔ وہ یہ اُسے عطا اور تم سے لے بھی سکتا ہے۔”
- علی ابن ابی طالب

دوسری زبانوں میں پڑھیں